جب تک صوبہ سرائیکستان کا باقاعدہ قیام عمل میں نہیں آتا: – منظور رحمانی ایڈووکیٹ سپریم کورٹ

1): سرائیکیوں کو سول سروس، پاک فوج میں سرائیکی علاقوں کی آبادی کے مطابق کوٹہ مقرر کیا جاۓ۔
2): سرائیکیوں کی پسماندگی اور ناخواندگی کے پیش نظر سرائیکی طلبا کو پرائمری سے یونیورسٹی لیول تک 5000 سے 15000 ماھوار وظیفہ بذریعہ ATM دیا جاۓ۔ اور آئین کے آرٹیکل A-25 کا عملی نفاذ کرتے ہوۓ تعلیم کو جبری قرار دیا جاۓ۔
3):سرائیکی علاقوں میں چونکہ مذھبی عنصر فائق ھے، اس لیے تمام مساجد اور مدارس کو اسکول قرار دیکر مذھبی پیشوا، آئمہ ، علما کرام کی سرکاری طور تنخواہ/ وظیفہ مقرر کیا جاۓ اور مذھبی تعلیم کو نصاب کا حصہ بنایا جاۓ۔
4):سرائیکی طلبا کو پنجابی طلبا جیسا تعلیمی ماحول اور تعلیمی ادارے میسر نہیں ، اسلیے تمام پروفیشنل سیٹس میڈیکل، انجینیرنگ وغیرہ میں سرائیکی طلبا کے لیے سرائیکی علاقوں کی آبادی کی مناسبت سے کوٹہ مقرر کیا جاۓ۔
5):گزشتہ 70 سالوں کے دوران سرائیکی علاقوں کو ترقیاتی بجٹ سے محروم رکھا گیا، اس لیے اب ترقیاتی بجٹ کا 70% صرف سرائیکی علاقوں پر خرچ کیا جاۓ، تا کہ سرائیکیوں کا احساس محرومی کم ھو۔
6): سرائیکی غربت کی لکیر سے نیچے زندگی گزار رھے ہیں۔ سرائیکیوں کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کے لیے، سرائیکی علاقوں کو 10 سال کے لیے ٹیکس فری انڈسٹریل زون قرار دیا جاۓ۔
7):تعلیم یافتہ سرائیکی نوجوانوں کا احساس محرومی کم کرنے کے لیے سرائیکی علاقوں پر مشتمل خواندہ نوجوانوں کے لیے 50،000 سرکاری ملازمتوں کا پیکج دیا جاۓ۔
8):کالا باغ ڈیم کا نام تبدیل کر کے فوری طور پاک فوج کی نگرانی میں کام شروع کیا جاۓ۔
9):سرائیکی طلبا کو پنجابی طلبا کے برابر لانے کے لیے تمام سرائیکی علاقوں میں تحصیل سطح پر میڈیکل_ انجینیرنگ اور کیڈٹ کالج کا قیام عمل میں لایا جاۓ۔ اس کے لیے جتنا ٹیکس ضرورت ھے، سرائیکیوں پر اضافی ڈالا جاۓ۔
10):سرائیکیوں کی حوصلہ افزائی کے لیے فوری طور سرائیکی بینک، ملتان سول سیکرٹریٹ، اور پاک فوج نیں سرائیکی ریجمنٹ کا قیام عمل میں لایا جاۓ۔
11): آئین کے آرٹیکل 251 کے مطابق سرائیکی کو قومی زباں کا درجہ دیا جاۓ۔
12): اگر ان مطالبات پر عمل نہیں ھو سکتا تو فوری طور بلا تاخیر سرائیکی علاقوں پر مشتمل صوبہ سرائیکستان کا قیام عمل میں لایا جاۓ، یا پھر سرائیکیوں کی طرف سے بحثیت قوم احتجاج جسے پنجابی بغاوت کہیں گے، کا مقابلہ کیا جاۓ۔ منظور رحمانی ایڈووکیٹ سپریم کورٹ

پوسٹ ٹیگز:

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*
*